صدرعارف علوی کے پاس اختیار ہےکہ وہ سمری موصول ہونے کے بعد وزیر اعظم کو واپس بھیج سکتے ہیں، سینئر اینکر حامد میر کا دعویٰ – nation92news

صدرعارف علوی کے پاس اختیار ہےکہ وہ سمری موصول ہونے کے بعد وزیر اعظم کو واپس بھیج سکتے ہیں، سینئر اینکر حامد میر کا دعویٰ

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وفاقی وزیردفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ آرمی چیف کی تعیناتی کی سمری

آج صدر کو بھیجی جائے گی، صدر نے سمری روکی تو غیر یقینی صورت حال ہو گی ۔ نجی ٹی وی چینل “جیونیوز “کے مطابق خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ “میرا  نہیں خیال کہ صدر کوئی تنازعہ والی تاریخ چھوڑنا چاہیں گے۔
عمران خان آرمی چیف کی تعیناتی کےمعاملے پر صرف سیاست کر رہے ہیں “۔ رپورٹ کے مطابق  وزیر دفاع نے کہا کہ علم میں نہیں کہ حکومت نے آرمی چیف کی تعیناتی سے متعلق صدرمملکت سے کوئی بات کی ہے یا نہیں، آصف زرداری نے معاملے پر اچھی تجویز دی ہے ، آصف زرداری کی رائے ترجیح میں پہلے نمبر پر ہو گی۔ جبکہ وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ صدر عارف علوی

سمری پر دستخط نہیں کرتے تو اُن کے پاس دوسرا پلان موجود ہے، انتظار کے باوجود فیصلہ تبدیل نہیں ہوگا، امید ہے صدر مملکت اپنی آئینی ذمہ داری پوری کریں گے۔ دوسری جانب سینئر صحافی وہ تجزیہ کار حامد میر کا کہنا ہے کہ آئین پاکستان کی دفعہ 48 صدر عارف علوی کو یہ اختیار دیتی ہے کہ وہ کوئی سمری موصول ہونے کے بعد 15 دن کے اندر سمری کو نظر ثانی کے لئے وزیراعظم کو واپس بھیج سکتے ہیں ۔تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ صدر پاکستان آئین کے اندر رہ کر معاملہ لٹکانے کا اختیار رکھتے ہیں لیکن آخرکار ہو گا وہی جو وزیراعظم چاہیں گے۔ حامد میر نے ساتھ ہی پروگرام کا ویڈیو کلپ بھی جاری کیا ہےجس میں وہ ٖچیف آف  آرمی سٹاف کی تعیناتی سے متعلق سمری اور  صدر عارف علوی کی جانب سےسمری کی منظوری کے حوالے سے بات کر رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.